گال ٹیسٹ 229

گال ٹیسٹ: نواز کی پانچ وکٹوں کے باوجود سری لنکا کی پوزیشن مستحکم

محمد نواز کی عمدہ باؤلنگ کے باوجود سری لنکا نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں دنیش چندیمل، کوشل مینڈس اور اوشادا فرنینڈو کی نصف سنچریوں کی بدولت اپنی پوزیشن مستحکم کرتے ہوئے 333 رنز کی مجموعی برتری حاصل کرلی۔

پیر کو میچ کے تیسرے دن سری لنکا نے 36 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ سے اپنی دوسری نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی تو محمد نواز نے جلد ہی نائٹ واچ مین کاسن رجیتھا کو چلتا کردیا تاہم اس کے بعد اوشادا فرنینڈو اور کوشل مینڈس ڈٹ گئے۔

دونوں کھلاڑیوں نے تیسری وکٹ کے لیے 91رنز کی شراکت قائم کر کے اپنی ٹیم کی پوزیشن کو مستحکم کردیا، یاسر شاہ نے 64 رنز بنانے والے اوشادا کو آؤٹ کر کے پاکستان کو تیسری کامیابی دلائی۔

اینجلو میتھیوز صرف 9 رنز بنا سکے جبکہ کوشل مینڈس کی 76 رنز کی اننگز بھی یاسر کے ہاتھوں اختتام کو پہنچی۔

گال ٹیسٹ: پانچ وکٹیں گرنے کے بعد دنیش چندیمل کا ساتھ دینے دھننجیا ڈی سلوا آئے اور دونوں نے 40رنز کی ساجھے داری

پانچ وکٹیں گرنے کے بعد دنیش چندیمل کا ساتھ دینے دھننجیا ڈی سلوا آئے اور دونوں نے 40رنز کی ساجھے داری قائم کی لیکن یاسر کی تیسری وکٹ نے دھننجیا کی مزاحمت کا خاتمہ کردیا۔

دوسرے اینڈ سے نواز نے پہلے نروشن ڈکویلا اور پھر رمیش مینڈس کو آؤٹ کر کے ٹیسٹ کرکٹ میں پہلی مرتبہ اننگز میں پانچ وکٹیں لینے کا اعزاز حاصل کر لیا۔

سری لنکا نے تیسرے روز کھیل کے اختتام پر 9 وکٹوں کے نقصان پر 329 رنز بنائے ہیں اور مجموعی طور پر 333 رنز کی برتری حاصل کر لی ہے۔

دنیش چندیمل 86 رنز بنا کر کھیل رہے ہیں اور پراباتھ جے سوریا ان کا ساتھ دے رہے ہیں اور 4 رنز بنا رکھے ہیں۔

مزید پڑھیے: ویرات کوہلی کی حمایت پر بابراعظم کی اسپورٹس مین شپ کی ٹوئٹر پر تعریف

پاکستان کی جانب سے محمد نواز نے 5 اور یاسر شاہ نے تین وکٹیں لیں۔

یاد رہے کہ سری لنکا کی ٹیم پہلی اننگز میں 222 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی جس کے جواب میں بابر اعظم کی سنچری کی بدولت پاکستان نے 218رنز بنائے تھے۔

گال ٹیسٹ: نواز کی پانچ وکٹوں کے باوجود سری لنکا کی پوزیشن مستحکم” ایک تبصرہ

Leave a Reply